بلوچ ، پشتون وافغان ثقافتی رنگ نمایا


کوئٹہ کے نجی ہوٹل میں غیر سرکاری تنظیموں کی جانب سے گھریلو خواتین کے ثقافتی کشید ہ کاری کے کام کو بآسانی مارکیٹ تک رسائی دینے کےلئے2روزہ ثقافتی نمائش کا انعقاد کیاگیا۔کوئٹہ شہر کے گردونواح سے خواتین نے بڑی تعدادمیں شرکت کرکے ثقافتی نمائش میںمزید خوبصورتی بکھیردیا۔تفصیلات کے مطابق کوئٹہ کے مقامی ہوٹل میں خواتین کیلئے 2روزہ پروقار نمائشی تقریب کااہتما م کیاگیاجس میں بلوچستان کے ثقافتی رنگ بہترین انداز میں سج گئے۔بڑی تعدا میں خواتین نے شرکت کرکے نمائشی توریب کو چارچند لگا دیئے ۔نمائش کے دوران منتظمین نے صوبے کے بلوچ اور پشتوں ثقافت کے کشیدہ کاری سے مزین کپڑوں اور خواتین کے کام کو بآسانی مارکیٹ تک رسائی دینے کیلئے ای کامرس ایپ متعارف کرائی ۔ اس ایپ کے ذریعے خواتین گھر بیٹھے اپنے کشیدہ کاری ودیگر خوبصورت کڑائی کے کام کو موبائل سے اس ایپ کے ذریعے چند سیکنڈزمیںمارکیٹ تک پہنچ سکتی ہیںجس سے انہیں روزگار کاذریعہ بھی میسر ہوگا اور وہ بآسانی گھر کے معاشی مسائل حل کرنے میں معاون ثابت ہوسکتی ہیں۔۔ نمائشی تقریب میں شریک خواتین نے غیر سرکاری تنظیموں کے اس کاوش کو سراہتے ہوئے کہا کہ اس طرح کے تقاریب کے انعقادسے انہیں اپنی پسند یدہ لباس ودیگر کڑائی کے کام کو منتخب کرنے میں آسانی ہوتی ہے۔ثقافتی نمائش میں موجود خوبصورتی اور دلکش کام کے باعث بلوچ ، پشتون ور افغان ثقافتی رنگ نمایا ںاور دیکھنے والوں کی توجہ کامرکز بنے رہے۔نمائش میں منتظمین کی جانب سے لگائے گئے اسٹالز پر ثقافتی پہناوے، جیمز اینڈ جیولیری اورروزمرہ کے استعمال کے والی اشیاءکو خوبصورتی سے سجایا گیا تھاجس کہ دیکھنے والوں کو اپنی جانب متوجہ کرتے رہے۔ نمائش میں شریک خواتین کا کہناتھا کہ بلوچستان کے خواتین بھی ٹیلنٹ اورمہارت میں کسی سے کم نہیں ہیں ضرورت اس امر کی ہے کہ انہیں مواقع فراہم کئے جائیں تاکہ وہ اپنے کام کو دنیا کے سامنے بہتر انداز میں اجاگر کرسکیں۔انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ بلوچستان کے دوردراز اضلاع میں سرکاری سطح پر بھی ایسے تقاریب کاانعقادکیا جائے تاکہ وہاں کے خواتیب کو اپنے کام کو آگے لانے کاموقع مل

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Close
Close