وزیراعلیٰ سیکریٹریٹ کے ملازمین کو کرونا وائرس سے متعلق شعور و آگاہی کی فراہمی کے حوالے سے منعقدہ تقریب سے خطاب

0

- Advertisement -

 وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے کورونا وائرس کے حوالے سے عوامی سطح پر احتیاطی تدابیر اپنانے اور شعور کی آگاہی کو عام کرنے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ یہ وائرس باہمی میل جول سے دوسرے انسانوں تک منتقل ہوتا ہے جس میں کسی غفلت کا مظاہرہ نہیں کرنا چاہئے. ان خیالات کا اظہار انہوں نے وزیراعلیٰ سیکریٹریٹ کے ملازمین کو کرونا وائرس سے متعلق شعور و آگاہی کی فراہمی کے حوالے سے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا. تقریب میں ڈبلیو ایچ او WHO کے ماہرین نے بھی ملازمین کو آگاہی فراہم کی. اس موقع پر صوبائی وزراء میر ظہور احمد بلیدی، زمرک خان اچکزئی اور میر ضیاء لانگو بھی موجود تھے. وزیراعلیٰ نے کہا کہ کورنا وائرس کی روک تھام کے لئے احتیاط ضروری ہے. ہمیں چاہئے کہ ہم ڈرنے کی بجائے احتیاط پر توجہ دیں،ملنے جلنے کے دوران مناسب فاصلہ رکھا جائے. ہمارے دین میں بھی وباء کے پھوٹنے کے سبب احتیاط برتنے پر زور دیا گیا ہے. وزیراعلیٰ نے ملازمین کو ہدایت کی کہ وہ لوگ جو کسی وجہ سے وائرس کی روک تھام کے حوالے سے احتیاطی تدابیر سے نابلد ہیں، اس ضمن میں انہیں بھی شعور دینے کی ضرورت ہے کیونکہ دورافتادہ علاقے جہاں ابلاغ کے ذرائع کم ہیں اس حوالے سے آگاہی اہمیت کی حامل ہے تاکہ انہیں بھی وائرس کے ممکنہ خطرات سے بچانے کے لئے صفائی اور دیگر ضروری تدابیر کو اپنانے سے متعلق آگاہ کیا جائے. اس کام کو صدقہ جاریہ سمجھ کر کیا جائے اور ایک اچھے شہری ہونے کا فرض ادا کیا جائے. وزیراعلیٰ نے کہا کہ ہاتھوں کی صفائی بہت ضروری ہے جہاں جہاں آپ اپنی ڈیوٹی سرانجام دے رہے ہیں وہاں آپ کو سب سے زیادہ خیال رکھنا ہے اور اس وائرس کے پھیلاو کو روکنا ہے. جہاں ماسک پہننا ضروری ہے وہاں ماسک پہنا جائے ہاتھوں کو صاف رکھا جائے. وزیراعلیٰ نے کہا کہ یہ ایک آزمائش ہے اور اس حوالے سے ہماری بھی انفرادی اور اجتماعی ذمہ داریاں بنتی ہیں. آزمائشیں اور مشکلات انبیاء پر بھی آئی ہیں لیکن اس کے ساتھ ساتھ اللہ تعالیٰ نے اس کی تدابیر بھی دیں، تاریخ میں انبیاءکی مثالوں سے سبق ملتا ہے کہ اچھے وقت میں برے حالات سے نبرد آزما ہونے کی تیاری کی جائے. ہمارے لئے بھی ضروری ہے کہ قوی ایمان اور بلند حوصلے کے ساتھ ساتھ احتیاط بھی برتیں جس سے ہم بہتر طریقہ سے چیلنجز سے نمٹ لڑسکتے ہیں جو آج ہماری ضرورت بھی ہے. وزیراعلیٰ نے کہا کہ اس حوالے سے مسجد ومنبر کا کردار بھی کلیدی ہے کیونکہ مسجد ایک عبادت گاہ ہونے کے ساتھ ایک تعلیمی ادارہ بھی ہے جس کی مثال اسوہ حسنہ سے بھی ملتی ہے. علمائے کرام بھی اس حوالے سے منبر سے عوام کو احتیاطی تدابیر کے حوالے سے شعور دیں اور عوام کسی بھی قسم کا سوال پوچھنے میں ہچکچاہٹ محسوس نہ کریں. وزیراعلیٰ نے کہا کہ امید ہے ہم اس وائرس سے نمٹنے میں کامیاب ہوں گے جس کے لئے معاشرے کے ہرفرد کو اپنی ذمہ داری ادا کرنے کی ضرورت ہے تاکہ اس وباءکے خلاف ایک اجتماعی کوشش کے ذریعہ اس کا تدارک ہو سکے.

Leave A Reply

Your email address will not be published.