کوئٹہ:کرشنگ پلانٹ سے قریبی آبادیوں کو بدترین مشکلات کا سامناہے

0

- Advertisement -

 

 

کوئٹہ کے نواحی علاقے مغربی بائی پاس پر کرانی، ہزارہ ٹاؤن اختر آباد میں کرشنگ پلانٹ سے قریبی آبادیوں کو بدترین مشکلات کا سامناہے کوئٹہ کے مغربی بائی پاس پر کرشنگ پلانٹس کچھ عرصے سے بند ہونے کے بعد دوبارہ شروع کردیئے گئے ہیں جس سے قریبی آبادی شدید متاثر ہورہی ہے کریش پلانٹ لگنے سے مختلف قسم کی بیماریاں پھیلنے لگی ہیں قریبی آبادیوں کے لوگ ٹی بی دمہ سانس کی بیماریوں میں مبتلا ہونے لگے ہیں علاقے کے رہائشیوں نے اپنے ایک مشترکہ بیان میں کہاہے کہ کوئٹہ شہر آلودہ ترین شہروں میں شمار ہونے لگا ہے درختوں کو بے دریغ کاٹا گیاہے کریشنگ کے گرد آلود سے علاقے کے لوگوں میں دمہ اور ٹی بی کے امراض میں مبتلا ہونے کا خدشہ ہے علاقے میں سانس لینا دشوار ہوتا جارہاہے مغربی بائی پاس پر جہاں کریشنگ پلانٹ واقعہ ہے اس سے کچھ فاصلے پر ٹی بی سینٹوریم واقع ہے جہاں ٹی بی کے انتہائی نگہداشت کے مریضوں کو کریشنگ کے گرد غبار سے برا اثر پڑرہاہے عدالت عالیہ نے آبادیوں کے قریب کرش پلانٹ لگانے پر سختی سے نوٹس لیاتھا محکمہ جنگلات جو علاقے کے لوگوں کو اپنے ہی زمین پر قابض ہونے کے باوجود تنگ کرتے ہیں لیکن کریشنگ پلانٹس کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کرتے کچھ عرصہ پہلے محکمہ تحفظ ماحولیات نے ایکشن بھی لیا اور کچھ عرصے تک کریش پلانٹ بند بھی رہے لیکن اب دوبارہ سے پھر آبادیوں کے قریب کرش پلانٹ لگائے گئے ہیں ہم عدالت عالیہ صوبائی حکومت اور محکمہ تحفظ ماحولیات سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ فوری طورپر ایکشن لے ان کریشنگ پلانٹس کو یہاں سے شفٹ کرکے جہاں ان کو کریشنگ زون آلاٹ کیا گیا تھا وہاں شفٹ کیاجائے کریش بجری کی ٹرانسپورٹیشن کے دوران روڈ پر ٹریکٹر اور ڈمپر سے بجری اور کریش روڈ پر گرنے سے کئی حادثات ہوچکے ہے جس سے کئی جانی و مالی نقصانات رونما ہوچکے ہیں لہٰذا اس اہم مسئلے کی جانب توجہ دے کر عوام پر رحم کریں۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.