گورنمنٹ پرائمری سکول کلی ملک محمد عمر ریکی دالبندین کی حالت زار اور ہماری خاموشی طلباء کی تعداد 100 ہے اور دو اساتذہ کرام


گورنمنٹ پرائمری سکول کلی ملک محمد عمر ریکی دالبندین کی حالت زار اور ہماری خاموشی”

وقار ریکی دالبندین

گورنمنٹ پرائمری سکول کلی ملک محمد عمر ریکی دالبندین شہر میں جنوب کی طرف ائرپورٹ اور قبرستان کے نزدیک واقع اک پرائمری سکول ہے، سکول میں طلباء کی تعداد 100 کے لگ بھگ ہے اور دو اساتذہ کرام اس وقت بڑے اچھے طریقے سے پڑھانے میں مصروف عمل ہے، لیکن ان طلباء کےلئے دو اور اساتذہ کی انتہائی ضرورت ہے، طلباء بھی محنت اور لگن کے ساتھ اپنا تعلیمی سفر جاری رکھے ہوئے ہیں، لیکن سکول کی حالت زار کو دیکھ کر دل خون کے آنسو روتا ہے، بے یارومددگار یہ سکول تمام سہولیات سے یکطرفہ محروم ہے، سکول میں پانی، بجلی اور باتھ روم کا انتظام بھی ناگفتہ ہے، دیوارے ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہے، سکول میں چاردیواری کا نام و نشان تک نہیں اور بارشوں کے موسم میں چھت بھی ٹپکتی ہے مطلب سکول کھنڈر نمونہ بن چکا ہے، اسکول انتظامیہ بھی سکول کی خستہ حالی اور سہولیات کے فقدان پر بہت پریشان نظر آتے ہیں، ان تمام سہولیات نہ ہونے کی وجہ سے اکثر اوقات طلباء سکول نہیں آتے یا بلکل سکول کو خیرباد کہہ دیتے ہیں۔
ہمارے ایم پی اے جناب میر عارف جان حسنی، ایم این اے جناب حاجی میر محمد ہاشم نوتیزئی، ایجوکیشن آفیسر حاجی امان اللہ نوتیزئی تعلیم کے فروغ میں اہم کردار ادا کرنے میں مصروف ہیں، درسگاہوں کی حالت بدلنے اور بچوں میں پڑھائی کا شعور اجاگر کرنے کے لیے بیش بہا خدمات سرانجام دے رہی ہیں، پرائمری سکول ان کی توجہ چاہتے ہیں کہ سکول کی حالت زار کو دیکھ کر یہاں بھی اپنا بہترین، مخلصانہ کردار ادا کرنا چاہیے، یہ بچے آپ ہی کے بچے ہیں، ان کی مستقبل کو سنوارنا ہم سب کا فرض بنتا ہے۔۔۔۔۔۔۔ شکریہ

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Close
Close