صوبائی پی ایس ڈی پی میں نظرانداز کرنے ،اپوزیشن

0

- Advertisement -

متحدہ اپوزیشن بلوچستان کی جانب سے صوبائی پی ایس ڈی پی میں نظرانداز کرنے ،اپوزیشن حلقوں میں مداخلت کورونا وائرس کی آڑ میں کرپشن اور بے روزگاری کے خلاف صوبائی اسمبلی سے ریلی نکالی گئی اور وزیراعلیٰ ہاﺅس کے سامنے احتجاجی دھرنا دیاگیا۔گزشتہ روز بلوچستان اسمبلی میں شامل اپوزیشن جماعتوں جمعیت علماءاسلام ،بلوچستان نیشنل پارٹی ،پشتونخواملی عوامی پارٹی ودیگر کے اراکین اسمبلی کی جانب سے صوبے کی اپوزیشن کو ترقیاتی بجٹ میں نظرانداز کرنے ،حلقوں میں بے جا مداخلت سمیت بے روزگاری ودیگر کے خلاف صوبائی اسمبلی سے احتجاجی ریلی نکالی اور وزیراعلیٰ ہاﺅس کے سامنے پہنچ کر احتجاجی دھرنا دیاگیا ،سول سیکرٹریٹ چوک پرپولیس وانتظامیہ کی جانب سے انہیں روکنے کی کوشش کی گئی تاہم بعدازاں صرف اراکین اسمبلی کو اجازت دی گئی جبکہ میڈیا کو جانے کی اجازت نہیں دی گئی ،اس موقع پراحتجاجی مظاہرین نے جس کی قیات قائد حزب اختلاف ملک سکندرایڈووکیٹ کررہے تھے نے موقف اختیارکیاکہ آئندہ مالی سال کے بجٹ میں اپوزیشن جماعتوں کو اعتماد میں نہیں لیا گیاہے بلکہ ترقیاتی بجٹ میں اپوزیشن ارکان اسمبلی کو مکمل نظرانداز کیا گیا ہے جس کے خلاف تمام اپوزیشن جماعتوں نے حکومتی رویئے کے خلاف سخت احتجاجی تحریک چلانے کا فیصلہ کیااور اس سلسلے میں آج اراکین اسمبلی کی جانب سے وزیراعلیٰ ہاﺅس کی طرف ریلی نکالی گئی اگر مطالبات پر عمل نہ ہوا تو عوامی احتجاج کی کال دیں گے ، اپوزیشن اپنے آئینی اور قانونی حق نمائندگی کے لئے بھر پور جدوجہد اور احتجاج سے دستبردار نہیں ہوگی۔اپوزیشن اراکین اسمبلی کے احتجاجی کال سے قبل ہی ضلعی انتظامیہ ،پولیس کی جانب سے سیکورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے تھے ،پولیس کی بھاری نفری سیکرٹریٹ چوک پر تعینات کی گئی تھی ۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.