نوزائیدہ بچوں کی شرح اموات پر قابو پانا ایک بڑا چیلنج ہے

0

کوئٹہ 05مارچ:۔وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے کہا ہے کہ بچے ہمارا مستقبل ہیں، ان کی بہتر صحت اور نگہداشت والدین کے ساتھ ساتھ حکومت کی بھی ذمہ داری ہے

- Advertisement -

، نوزائیدہ بچوں کی شرح اموات پر قابو پانا ایک بڑا چیلنج ہے جس سے نمٹنے کے لئے چائلڈلائف فا¶نڈیشن کے اشتراک سے چائلڈ ایمرجنسی وارڈ کا قیام عمل میں لایا گیا ہے جو بچوں کی زندگی اور صحت کے تحفظ کی جانب موجودہ حکومت کا اہم اقدام ہے، ان خیالات کا اظہار انہوں نے سول ہسپتال کوئٹہ میں چائلڈ ایمرجنسی وارڈ کے افتتاح کے موقع پر دی جانے والی بریفنگ کے دوران کیا، چائلڈ لائف فا¶نڈیشن کے حکام کی جانب سے وزیراعلیٰ اور صوبائی وزراءکو ایمرجنسی وارڈ میں فراہم کی جانے والی علاج کی سہولتوں کے بارے میں بریفنگ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ کوئٹہ میں قائم کیا گیا چائلڈ ایمرجنسی وارڈ فا¶نڈیشن کے تحت قائم کیا جانے والا دسواں وارڈ ہے، اس سے قبل فا¶نڈیشن نے حکومت سندھ کے تعاون سے کراچی اور سندھ کے دیگر اضلاع میں ایسے 9وارڈ قائم کئے ہیں، بریفنگ میں بتایا گیا کہ وارڈ کے لئے ڈاکٹروں، فارماسیسٹ، نرسوں اور دیگر طبی اسٹاف پر مشتمل ایک سو افراد کا عملہ بھرتی کیا گیا ہے جنہیں کراچی میں تین ماہ کی ٹریننگ دی گئی ہے، وارڈ کی ایمرجنسی 24گھنٹے کھلی رہے گی اور نوزائیدہ اور کم عمر بچوں کو ایمرجنسی کی صورت میں فوری طور پر طبی امداد اور علاج معالجہ کی سہولت دستیاب ہوگی اور بچے کے رپورٹنگ ٹائم سے تین منٹ کے اندر علاج کا آغاز کردیا جائے گا، وارڈمیں جدید مشینری، لائف سیونگ ڈرگز سمیت ہرقسم کی سہولت فراہم کی گئی ہے جبکہ سٹیلائٹ ٹیلی میڈیسن کے ذریعہ وارڈ کے ڈاکٹروں کا کراچی میں فا¶نڈیشن کے ماہرین طب سے رابطہ بھی قائم رہے گا، وارڈ میں ایس ایم ایس سروس بھی متعارف کرائی گئی ہے جس کے ذریعہ زیرعلاج بچوں کے والدین سے علاج کے معیار اور ڈاکٹروں اور طبی عملے کے رسپانس اور رویہ سے متعلق رائے حاصل کی جائے گی، وارڈ کے ڈاکٹروں اور عملے کو بچوں کے والدین سے خوش اخلاقی، ہمدردی اور عوام دوست رویہ رکھنے کی خصوصی تربیت بھی دی گئی ہے، وارڈ کا قیام نوپرافٹ نو لاس کے اصول پر عمل میں لایا گیا ہے جس کے لئے صوبائی حکومت سالانہ دس کروڑ روپے کی گرانٹ فراہم کررہی ہے، اس موقع پر صوبے کے 27 ضلعی ہسپتالوں اور دس تحصیل ہسپتالوں کو سیٹلائٹ کے ذریعہ سینٹر سے منسلک کرنے کا فیصلہ کیا گیا جس کے ذریعہ دوردراز کے علاقوں کے بچوں کا ٹیلی میڈیسن کے طریقہ کار کے ذریعہ علاج معالجہ کیا جائے گا، وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ جلد از جلد ان ہسپتالوں کو سٹیلائٹ کے ذریعہ منسلک کیا جائے، وزیراعلیٰ نے کہا کہ بچوں کی شرح اموات میں کمی لانا اور ان کی زندگی بچانا ایک انتہائی احسن اقدام ہے جس کے لئے چائلڈ لائف فا¶نڈیشن قابل ستائش خدمات سرانجام دے رہی ہے، وزیراعلیٰ نے وارڈ کے مختلف شعبوں کا معائنہ کیا، وزیر اعلیٰ نے تختی کی نقاب کشائی کرکے وارڈکا باقاعدہ افتتاح کیا، وزیراعلیٰ کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ 268ملین روپے کی لاگت سے پیڈیاٹرک کمپلیکس کی تعمیر مکمل کی گئی جو گرا¶نڈ فلور اور تین منزلوں پر مشتمل ہے، جس میں چھ کنسلٹنٹس رومز،ایک لیکچر ہال، ایک لیبارٹری، ایک بلڈ سیمپلنگ روم، ایکسرے روم، ریڈیولوجسٹ روم، میڈیکل اسٹور، 45بستروں پر مشتمل 16 وارڈز، آئی سی یو، آپریشن تھیٹر سمیت ڈاکٹروں اور اسٹاف کے لئے آٹھ کوارٹر بھی شامل ہیں۔====

Leave A Reply

Your email address will not be published.